جو راہ وفا پہ چل چل کر……..

وہ چہرے میں نے دیکھے ہیں
جو راہ وفا پہ چل چل کر
اک روز بہت تھک جاتے ہیں
لوگوں کی نگاہوں سے چھپ کر
وہ اپنے زخم چھپاتے ہیں…
…ان گہری جھیل سی آنکھوں میں
کچھ موتی سے بن جاتے ہیں
ان چہروں سے میں کہتا ہوں
مجھے اپنے پیارے رب کی قسم
تم لوگ بہت
خوش قسمت ہو
اس راہ کے دکھ اس راہ کے غم
قسمت والوں کو ملتے ہیں
یہ چشم نم، یہ آلودہ قدم
دولت والوں کو ملتے ہیں
یہ درد کے ساغر، جام و جم
نسبت والوں کو ملتے ہیں
اس راہ میں رسوائی کے علم
عزت والوں کو ملتے ہیں
یہ چہرے جب بھی دیکھتا ہوں
میری آنکھوں کے آگے
وہ منظر گھوم سا جاتا ہے
وہ دن کہ جس کا وعدہ ہے
جو لوح ازل میں لکھا ہے
جب شاہ گدا بن جائیں گے
بس نام رہے گا اللہ کا
اس روز تمہارے یہ چہرے
اک چاند کی صورت چمکیں گے
اس روز تمہاری ہی خاطر
رستوں کو سجایا جاۓ گا
پلکوں کو بچھایا جاۓ گا
خوشبو کو لٹایا جاۓ گا
تم لوگ بہت خوش قسمت ہو
مجھے اپنے پیارے رب کی قسم
تم لوگ بہت خوش قسمت ہو —

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s